Ahmad Javaid

    35 Views

    Ahmad Javaid
    احمد جاوید
    अहमद जावेद
    سید سراواں، الہ آباد، اُتر پردیش، ہندوستان – Nov 08, 1955
    لاہور، پاکستان –

    احمد جاوید ممتاز شاعر، زیرک نقاد، دانش ور اور ہمہ جہت علمی، ادبی شخصیت ہیں۔ آپ کی قومی، دینی، عالمی معاملات پر گہری نظر ہے۔ ادب، مذہب، تصوف، علم کلام، فلسفہ آپ کے دلچسپی کے اصل میدان ہیں۔ ماہرِ اقبالیات ہیں۔ فارسی، اردو، انگریزی زبانوں پر عبور رکھنے کے ساتھ فارسی اور اردو میں شاعری بھی کرتے ہیں۔

    احمد جاوید 18نومبر 1955ءکو ہندوستان کے ضلع الہ آباد (یوپی) کے ایک گاﺅں سید سراواں میں پیدا ہوئے۔آپ کے والد حسین امیر عثمانی انگریزی کے استاد تھے۔ پڑھنے لکھنے کے شائق اور ادب کا شغف رکھتے تھے۔ والدہ بھی ادبی مزاج رکھتی تھیں۔ گویا ’ایں خانہ ہمہ آفتاب است‘ والا معاملہ تھا۔

    آپ 1958ءمیں تین سال کی عمر میں ہجرت کرکے کراچی تشریف لائے۔ ابتدا میں شاہ فیصل کالونی میں رہے جہاں والد کا ذریعہ روزگار انگریزی پڑھانا تھا۔

    احمد جاوید نے ابتدائی تعلیم جامعہ ملیہ اسکول ملیر سے حاصل کی۔ گورنمنٹ بوائز سیکنڈری اسکول جیل روڈ سے میٹرک کیا۔ بہا الدین زکریا یونیورسٹی ملتان سے گریجویشن اور پنجاب یونیورسٹی سے اردو ادب میں ایم اے کیا۔ 1980ء میں کراچی سے لاہور منتقل ہوئے۔ آپ نے معروف ادیبوں سلیم احمد، شمیم احمد اور قمر جمیل کی صحبتوں سے فیض حاصل کیا۔ دینی شخصیات میں مولانا ایوب دہلوی، مولانا اصلح الحسینی جیسی ہستیوں سے دینی علوم کو راسخ کیا۔ آپ 1985ء میں اقبال اکادمی لاہور کے ساتھ وابستہ ہوئے ۔

    احمد جاوید نے جہاں کراچی کے زیلن کافی ہاﺅس، سلطانیہ ہوٹل، کینٹین ریڈیو پاکستان اور سلیم احمد کی چوپال میں بیٹھ کر علم و دانش کے موتی سمیٹے، وہیں بکھیرے بھی ہیں۔ دنیا کے کئی ممالک میں آپ کو تصوف اور اقبالیات پر ہونے والی کئی بین الاقوامی کانفرنسوں میں شرکت کا اعزاز بھی حاصل ہے۔ ادب، شاعری، مذہب اور فلسفہ سمیت کئی موضوعات پر کئی درجن کتابیں تصنیف کرچکے ہیں۔

    قلم پر دسترس رکھنے کے باوجود انہوں نے زیادہ تر علمی موضوعات پر لیکچر دیے ہیں جنہیں بعد میں قلم بند کرکے کتابی صورت میں شایع کرنے کا اہتمام کیا گیا ہے۔ کم لکھنے کی وجہ کمر کی تکلیف بتاتے ہیں۔ پانچ کتابیں شایع ہوچکی ہیں اور پچیس سے زائدکتابیں زیر طبع ہیں، جن میں آندھی کا رجز (نثری نظموں کا مجموعہ)، ترک رذائل (اصلاحِ اعمال و اخلاق سے متعلق )، محی الدین ابن عربی، حیات (فارسی سے ترجمہ)، تسہیل پیام مشرق (اقبال، ترجمہ)، تسہیل جاوید نامہ (اقبال، ترجمہ)، تھیوری کے مباحث (زیر طبع)، دینی ذہن اور فلسفہ (زیر طبع)، اسلام کا ورلڈ ویو (زیر طبع)، کسب فضائل (زیرطبع)، کشف حقائق (زیر طبع)، اردو کی کلاسیکی شاعری پر گفتگو شامل ہیں۔ اس کے علاوہ انٹرنیٹ پر آپ کے فلسفہ، تصوف اور ادب پر بے شمار لیکچر موجود ہیں۔

    ٹی وی پروگراموں میں بھی شریک ہوتے رہے ہیں۔ آپ کی زندگی کا منفرد اور مقبول عام ٹی وی پروگرام ”حمزہ نامہ“ رہا ہے جس کے بارے میں کہتے ہیں کہ وہ جبرا کیا ہے۔ اقبال اکادمی سے ریٹائرمنٹ کے بعد آپ کی مصروفیات میں مختلف ادبی، علمی موضوعات پر تقریباً روزانہ لیکچر دینا شامل ہے۔ ایک آدھ بار تصوف پر مجلس بھی ہوتی ہے۔

    کُل نگارشات : 41

    1. آخر الامر تری سمت سفر کرتے ہیں – احمد جاوید
    2. آندھی کا رجز- احمد جاوید
    3. آنسو کی طرح دیدۂ پر آب میں رہنا – احمد جاوید
    4. آنکھوں کی تجدید- احمد جاوید
    5. اچھی گزر رہی ہے دل خود کفیل سے – احمد جاوید
    6. اُس آفتابِ غیب کا اصرار ہے یہ مستقل – احمد جاوید
    7. اس کے لہجے کا وہ اتار چڑھاؤ – احمد جاوید
    8. ان پڑھ گونگے کا رجز- احمد جاوید
    9. ایک تاثر- احمد جاوید
    10. ایک خیال- احمد جاوید
    11. ایک سورما کے نام- احمد جاوید
    12. ایک کھیل- احمد جاوید
    13. بارش کا ہے ایسا کال – احمد جاوید
    14. بہت مشغول ہے وہ آنکھ تجدیدِ تغافل میں – احمد جاوید
    15. بے زاری کی آخری ساعت- احمد جاوید
    16. تھا جانب دل صبح دم وہ خوش خرام آیا ہوا – احمد جاوید
    17. چاک کرتے ہیں گریباں اس فراوانی سے ہم – احمد جاوید
    18. حسن نجات دہندہ ہے- احمد جاوید
    19. دل آئینہ ہے مگر اک نگاہ کرنے کو – احمد جاوید
    20. دل بیتاب کے ہم راہ سفر میں رہنا – احمد جاوید
    21. دنیا سے تن کو ڈھانپ قیامت سے جان کو – احمد جاوید
    22. سنو سنو یہ نداے ستارۂ سحری – احمد جاوید
    23. سنو کہ رہنِ شنیدن نہیں مری آواز – احمد جاوید
    24. سنے گی خاکِ سیہ کب ہری بھری آواز – احمد جاوید
    25. صبا دیکھ اک دن ادھر آن کر کے – احمد جاوید
    26. علاج ہے مرے افلاس كا وہی آواز – احمد جاوید
    27. کتنے میں بنتی ہے مہر ایسی – احمد جاوید
    28. کسی کا دھیان مہ نیم ماہ میں آیا – احمد جاوید
    29. کوئی جل میں خوش ہے کوئی جال میں – احمد جاوید
    30. کیا پوچھتے ہو شہر میں گھر اور ہمارا – احمد جاوید
    31. کیا ہے دل نے بیگانہ جہان مرغ و ماہی سے – احمد جاوید
    32. گئے تھے وہاں جی میں کیا ٹھان کر کے – احمد جاوید
    33. مجھ سے بڑا ہے میرا حال – احمد جاوید
    34. مگر وہ دیا ہی نہیں مان کر کے – احمد جاوید
    35. موجود ہیں کتنے ہی تجھ سے بھی حسیں کر کے – احمد جاوید
    36. میرا دل چاہتا ہے – احمد جاوید
    37. نہال وصل نہیں سنگ بار کرنے کو – احمد جاوید
    38. ہرگز نہ راہ پائی فردا و دی نے دل پر – احمد جاوید
    39. ہماری ہم نفسی کو بھی کیا دوام ہوا – احمد جاوید
    40. ہمیشہ دل ہوس انتقام پر رکھا – احمد جاوید
    41. ہمیشہ دل ہوس انتقام پر رکھا – احمد جاوید

    Rate this post? اس نگارش کی درجہ بندی کریں

    Click on a star to rate it! درجہ بندی کے لئے موزوں ستارے پر کلک کریں

    Average rating اوسط درجہ / 5. Vote count: تعداد رائے

    No votes so far! Be the first to rate this post. اس نگارش کی درجہ بندی نہیں ہوئی، آپ پہلی درجہ بندی کریں

    We are sorry that this post was not useful for you!

    Let us improve this post!

    Tell us how we can improve this post?